منوی چپ


چہلم اور سر امام حسین علیہ السلام کا آپ کے جسم مبارک سے ملحق ہونا

محسن محمدی [1] ترجمہ و پیش کش: تصورعباس::::اس بارے میں اختلاف پایا جاتا ہے کہ اسیری کے بعد اھل بیت کا قافلہ کس وقت کربلا آیا ۔(پہلے چہلم پر یا اگلے سال)۔بعض کا نظریہ یہ ہے کہ دسویں محرم کے بعد پہلے چہلم پر یہ قافلہ کربلا آیا جب جابربن عبداللہ انصاری ، عطیہ کوفی اور بنی ہاشم کے بعض افراد کے ساتھ وہاں موجود تھے اور زیارت اور عزاداری امام حسین علیہ السلام کو انجام دیا ۔(پورےمضمون کےلیے عنوان پر کلک کریں)

قیادت ورہبری نہج البلاغہ کی روشنی میں

تحریر: تصورعباس 

روایات میں حضرت علی علیہ السلام کو جنت میں جانے والوں کا قائد بیان کیا گیا ہے جیسے پیغمبر اکرم  (صلی الله علیه و آله وسلم) کا ارشاد گرامی ہے  قائد الامۃ الی الجنۃ ، یا دوسری تعبیر ہے کہ   معراج کے موقع پر پیغمبراکرم  (صلی الله علیه و آله وسلم) کو ایک قصر دکھایا گیا اوروحی کی گئی کہ یہ قصر حضرت علی علیہ السلام کاہے کیونکہ ان میں یہ تین صفات پائی جاتی ہیں (انہ سید للمسلمین وامام المتقین و قائد الغرالمحجلین)

مھدویت کا عقیدہ شیعہ اور اہل سنت کی نظرمیں

تحریر: تصورعباس خان::مھدی موعود کا عقیدہ تمام مذاھب اسلامی کے مسلمات میں سے ہے اہل سنت کے مختلف فرقوں کے  علماء مھدویت کے متعلق روایات کومتواتر مانتےہیں ابن حجرھیثمی مکی ،احمد السرود الصباح ،شیخ محمد الخطابی المالکی ،اور شیخ یحیی بن محمد الحنفی اھل سنت کے چاروں فرقوں کے یہ بزرگ علماء مھدویت کے بارےمیں وارد ہونے والی احادیث کوصحیح السند اورمسلم مانتے ہیں (مھدی فقیہ ایمانی اصالۃ المھدی فی الاسلام ص۱۲۰)

امام زمانہ عج کے نسب پر تجزیہ و تحلیل

 تحریر:تصورعباس خان::تمام شیعہ اور بعض علما ء اہل سنت کے نزدیک امام مہدی امام حسن عسکری علیہ السلام کے ذریعے امام علی (ع)کی اولاد میں سے ہیں یعنی مہدی بن حسن العسکری بن علی نقی بن محمد تقی بن علی رضا بن موسی کاظم بن جعفرصادق بن محمد باقربن علی زین العابدین بن حسین بن علی علیہھم السلام اجمعین
 
 
 

    آپ کی والدہ گرامی کہ جس کو مختلف ناموں سے یا دکیا جاتاہے حضرت نرجس خاتون ہیں کہ جنہیں ریحانہ اورسوسن بھی کہاگیا ہے مورخین کے قول کے مطابق عربوں میں رواج تھا کہ جب کنیز کو گھرلے آتے تو اپنی مرضی سے اس کا نام رکھتے اور شاید یہی وجہ ہو آپ کے مختلف نام ہونے کی ۔
    
شیخ صدوق نے غیاث سے نقل کیا ہے کہ اس نے کہا امام حسن عسکری کا جانشین جمعہ کے دن پیدا ہوا اس کی والدہ ریحانہ تھیں کہ جنہیں نرجس ،صیقل اور سوسن بھی کہاجاتا تھا ۔۔۔کمال الدین وتمام النعمۃ ،ص٤٣٢
    
پس آپ کی والدہ حضرت نرجس خاتون تھیں کہ جنہیں ریحانہ ،سوسن اور صیقل بھی کہاجاتا تھا اور شیخ صدوق کی روایت کے مطابق آپ قیصرروم کے بیٹے

امام مہدی عج کی حکومت اور آپ کے انصار کی خصوصیات

مضمون نگار :صفدرحسین سیال، المصطفی یونیورسٹی                                                          امام زمانہ عج اس وقت دنیا کی حکومت کی باگ ڈورسنبھالیں گے جب دنیا میں ناامنی ،بے سروسامانی اورلاکھوں جسمانی ،روحانی اورذہنی بیماریاں پھیل چکی ہوں گی دنیا پر تباہی وبربادی چھاچکی ہوگی شہرجنگوں کی وجہ سے ویران ہوچکے ہوں گے

ولادت امام زمانہ عج پر عقلی ،نقلی اورتاریخی دلائل

مضمون نگار :درخشان وقارزیدی اورناھیدبانو ،المصطفی یونیورسٹی                                  خدا وند متعال نے اس دنیا کو اپنی حکمت سے خلق کیا ہے اوراس کائنات میں ایسا نظام قرار نہیں دیا کہ جس سے حیات انسانی مختل وبے راہ رو ہوجائے اوراسی ہدف کے تحت ہر زمانے میں ایک ایسے انسان کا انتخاب کیا کہ جو کشتی نجات کا ناجی ہے

نواب اربعہ اور ان کی ذمہ داریاں

   مضمون نگار: سکینہ بتول ،المصطفی یونیورسٹی                                                             عالم بشریت میں رہنے والے تمام انسانوں پر لازم ہے کہ وہ اپنے زمانے کے ہادی اورپیشوا کی معرفت رکھتے ہوںکیونکہ ہرزمانے کے لیے انسانو ں پر خدا کی ایک حجت ہے چاہے وہ حجت ظاہر ہو یا پوشیدہ اورپردہ غیب میں؛

 

کیا غیبت کبری میں امام کا نام لینا جائز ہے ؟

  تحریر:تصورعباس خان:::غیبت کبری کے آغاز سے ایک بحث چلی آرہی ہے کہ کیا امام مھدی کا نام جو پیغمبر نے بیان کیا ہے(محمد) کیاغیبت کبریٰ میں یہ نام  لینا جائز ہے یا نہیں؟ اور اس کی وجہ وہ روایات ہیں کہ جو آئمہ معصومین(ع) سے نقل  ہوئی ہیں بعض میں سختی سے منع کیا گیا ہے کہ امام مھدی (ع)کا نام نہ لیا جائے  اور بعض میں اجازت دی گئی ہے علماء کے درمیان اس بارے میں تین اقوال ہیں ؛

کیاامام زمانہ عج سے ملاقات ممکن ہے ؟

  تحریر:تصورعباس خان:::وجود امام زمانہ عج پر اعتقاد اور ان کی امامت کو قبول کرنا ایک واضح مسئلہ ہے کہ جس کاشمار مذھب شیعہ کی ضروریات میں سے کیا جاتا ہے ۔عقلی ،قرآنی اورحدیثی دلائل کے ذریعے یہ اعتقاداب تک بطوراحسن روشن اورواضح کیا گیا ہے لیکن زمانہ غیبت کی خاص تاریخی شرائط کےپیش نظر بہت سی بحثیں ابھی تک تشنئہ کام پڑی ہیں مثلا زمانہ غیبت میں حضرت حجت عج کی زندگی کی خصوصیات ، شیعی نظریہ میں مسئلہ غیبت کے آثار ،فوائداورنتائج ،